Disable Screen Capture Jump to content
Novels Library Plus ×
URDU FUN CLUB

صائمہ انٹی کی داستان


Recommended Posts

ہیلو دوستو میرا نام عبدل ہے اور میں اسلام آباد میں رہتا ہوں

میرے گھر پاس ایک ایک پٹھان عورت صائمہ اپنے شوہر ظہیر اور دو بچوں کے ساتھ رہتی تھی صائمہ کی عمر 37 سال تھی اور گوری چٹی عورت تھی اور صوابی کی رہنے والی تھی. صائمہ اکثر میرے گھر آتی رہتی تھی اور صائمہ کی میری ماں کے ساتھ دوستی بھی تھی. صائمہ کا شوہر ایک نمبر کا شرابی شخص تھا اور صائمہ کے ساتھ مار پٹائی بھی کرتا تھا.

 

ایک دن صائمہ آنٹی میرے گھر بریانی دینے آئی تو ماں گھر میں نہیں تھی اور میں گھر میں اکیلا تھا اور چھت پر ورزش کر رہا تھا. صائمہ آنٹی نے بریانی دی اور مجھ سے میری ماں نسرین کا پوچھا کہ کہاں گئ ہے؟ میں نے کہا ماں بازار تک گئ ہے اور میں نے صائمہ کو آنٹی کو بیٹھنے کا کہا اور فرج سے پیپسی نکال کر دی اور صائمہ آنٹی پینے لگی.

 

صائمہ آنٹی ایک گوری چٹی اور بھرے ہوئے جسم والی خوبصورت عورت تھی مگر اسکا شوہر ظہیر اسکو بہت مارتا اور گالی گلوچ کرتا تھا.

 

صائمہ بولی یاسر بہت جان بنا رہے ہو اچھی باڈی بنا لی ہے کوئی گرل فرینڈ بھی ہے یا نہیں؟

 

میں نے مسکرا کر کہاں صائمہ آنٹی کوئی ملے آپ جیسی خوبصورت تب نا

 

صائمہ :- اچھا تو میں خوبصورت ہوں. میں نے کہا اور کیا ظہیر تو پاگل ہے جو آپ کو مارتا پیٹتا رہتا ہے

 

صائمہ بولی اب کیا کریں میں تو شادی شدہ 37 سال کی عورت ہوں تم ابھی 19 سال کے ہو اپنی عمر کی کوئی لڑکی دوست بناؤ

 

میں نے مسکراتے ہوئے کہا مجھے دراصل آنٹیاں پسند ہیں

 

صائمہ آنٹی مجھے غور سے دیکھتے ہوئے بولی مجھ سے دوستی کرنی ہے تو پکی کرنی ہو گئی میں پھر پیچھے ہٹنے نہیں دوں گی

 

میں نے کہا پیچھے کون ہٹنا چاہتا ہے تو صائمہ آنٹی بولی شروع شروع میں سب یہی کہتے ہیں

 

میں نے کہا صائمہ آنٹی میں تو نہیں پیچھے ہٹنے والا پھر صائمہ آنٹی بولی اپنا نمبر دو میں تمہیں رات بلایا کروں گی جب رات ظہیر شراب پی کر دھت سو جایا کرے گا مجھے بھی ایک دوست کی ضرورت ہے جو مجھے پیار دے

 

میں نے صائمہ کا ہاتھ پکڑ لیا اور کہا صائمہ آنٹی کی آنکھوں میں دیکھ کر کہا فکر نہ کرو میں بہت پیار دوں گا

 

صائمہ آنٹی بولی عبدل میں بھی یہی چاہتی ہوں

 

اسکے بعد صائمہ آنٹی گھر چلی گئی.

 

اگلی رات 11 بجے مجھے صائمہ آنٹی کا میسج آیا میرے گھر اجاؤ میں دروازے پر آتی ہوں اور آرام سے کھول کر اندر اجاؤ

 

میں رات گیارہ بجے دروازے پر پہنچا اور دروازے کو ہلکا سا اندر کو دبایا تو دروازہ کھل گیا اور میری نظر صائمہ آنٹی پر پڑی صائمہ نے مجھے اندر بلا کر دروازہ بند کر دیا اور مجھے ڈرائینگ روم میں لے کر چلی گئی.

 

صائمہ نے گلابی شلوار قمیض پہن رکھی تھی اور بہت مست لگ رہی تھی مجھے ڈرائنگ روم میں بیٹھا کر صائمہ نے زیرو کا بلب جلا دیا اور لائٹ بند کر کہ دروازہ بند کر کہ میرے پاس صوفے پر آکر بیٹھ گئی.

 

صائمہ :- عبدل میں نے اپنا وعدہ پورا کیا ہے میرا شوہر ظہیر سو رہا ہے اور میں تمہارے پاس بیٹھی ہوئی ہوں اب تم نے اپنا وعدہ یاد رکھنا ہے ورنہ اچھا نہیں ہوگا میں پٹھان ہوں اور دوستی دشمنی اچھے سے کرنا جانتی ہوں.

 

میں نے صائمہ کی کمر پر ہاتھ پھیرتے ہوئے کہا اتنی گرم پٹھانی ملے گی تو کون پیچھے ہٹے گا میں تمہارے ساتھ ہوں اور ساتھ ہی میں نے صائمہ کے سر کو قریب لایا اور اس کے ہونٹوں کو چومنے لگا.

 

صائمہ میرا ساتھ دینے لگی اور میں صائمہ کی کمر کو سہلا رہا تھا اور صائمہ نے اپنی زبان میرے منہ میں ڈال دی تھی اور میں چوس رہا تھا. صائمہ زور زور سے سسکیاں لے رہی تھی اور میں نے صائمہ آنٹی کہا آہستہ سسکیاں لو تیرا شوہر ظہیر آٹھ جائے گا تو صائمہ آنٹی بولی وہ بہن چود نہیں اٹھے گا شراب پی کر سو جائے تو نہیں اٹھتا ہے.

 

میں نے صائمہ آنٹی کے36 سائز ممے قمیض کے اوپر سے دبانے شروع کر دیے اور ساتھ ساتھ صائمہ کے ہونٹ چوس رہا تھا. صائمہ فل گرم ہو چکی تھی اور صائمہ اپنا ہاتھ میرے پاجامہ کے اوپر سے لن پر پھیرنے لگی صائمہ آنٹی بولی عبدل پاجامہ اتار اور ساتھ ہی صائمہ آنٹی نے اپنی شلوار اتار کر بولی عبدل  تیرے لیے آج اسپیشل اپنی چوت صاف کیا ہے.

 

میں نے صائمہ آنٹی کی پھدی پر ہاتھ پھیرا تو وہ پانی سے بھری ہوئی تھی بہت گیلی تھی. میں نے اپنی شرٹ اتاری اور صائمہ آنٹی کی قمیض بھی اتار دی اور صائمہ آنٹی کا سفید برا بھی اتار دیا اب میں اور صائمہ آنٹی فل ننگے تھے.

 

صائمہ آنٹی میرے لن پر ہاتھ پھیر رہی تھی اور بولی عبدل تیرا لنڈ بہت کڑک ہے کسی کی چوت میں گھسایا ہے پہلے کبھی؟ میں نے کہا ہاں کافی بار پھدی چودی ہے

 

صائمہ آنٹی بولی اب یہ لنڈ میرا ہے بس میری چوت میں ڈالنا جب تمہارا لنڈ گرم ہو میری چوت میں آکر ڈالنا

 

میں نے صائمہ آنٹی کو کہا چل پھر لوڑا چوس اور صائمہ آنٹی زمین پر بیٹھ کر میرے 7 انچ لمبے لن پر زبان پھیرتے ہوئے لن منہ میں لے کر چوسنے لگی اور میں مزے کی بلندیوں پر تھا صائمہ آنٹی میرا لن چوستی اور پھر لن نکال کر اپنے گورے چٹے مموں میں رگڑتی اور پھر سے چوسنے لگتی.

 

میں صائمہ آنٹی کو لن چسوانے کے بعد صائمہ آنٹی کے ممے چوسنے لگا تو صائمہ آنٹی مچلنے لگی صائمہ آنٹی بولی آہ عبدل زور زور سے میرے ممے چوسو آہ کھا جاؤ میرا دودھ پی جاؤ میں زور زور سے صائمہ کے ممے چوس رہا تھا کہ صائمہ بولی آہ عبدل میرا چوت کا پانی نکل رہا ہے

 

میں نے فوراً صائمہ آنٹی کی ٹانگیں کھولی اور صائمہ آنٹی کی چوت کے سوراخ پر زبان پھیرنے لگا صائمہ آنٹی کی چوت سے گاڑھا سفید مادہ نکل رہا تھا. جسے میں نے چاٹنا شروع کر دیا اور کھا گیا اور اب صائمہ کی گرم چوت میں زبان ڈال کر چوسنے اور چاٹنے لگا صائمہ آنٹی مچل رہی تھی اور میں صائمہ آنٹی کی گرم چوت چاٹ رہا تھا دس منٹ صائمہ آنٹی کی پھدی چاٹنے کے بعد میں نے اپنا لن صائمہ آنٹی کے ہاتھ میں دیا تو صائمہ آنٹی نے میرا 7 انچ کا لن پکڑ کر اپنی پھدی کے سوراخ پر رکھ دیا اور بولی عبدل  میری ٹانگیں اپنے کندھے پر رکھ اور جم کر چودو میری چوت. میں نے گھسا مارا تو میرا آدھا لن صائمہ آنٹی کی پھدی کے اندر گھس گیا اور میں نے زور زور سے گھسے مارتے صائمہ آنٹی کی پھدی کے اندر پورا لن ڈال دیا اور صائمہ آنٹی کی پھدی چودنے لگا.

 

آف کیا چوت تھی صائمہ آنٹی کی ایک پٹھان شادی شدہ عورت کی گرم چوت چود کر بہت مزا آریا تھا.

 

صائمہ آنٹی سسکیاں لے رہی تھی اور کہہ رہی تھی زور زور سے میری چوت چودو اور میں صائمہ آنٹی کی پھدی پر زور دار جھٹکے مار رہا تھا

 

میں نے صائمہ آنٹی کی چوت سے لن نکال دیا اور صائمہ آنٹی کو گھوڑی بننے کا کہا اور صائمہ آنٹی گھوڑی بن کر بولی عبدل چودو میری پھدی جم کر چودنا میری پھدی کو، اب میری گرم پھدی کا خیال تمہیں رکھنا ہو گا. میں نے صائمہ آنٹی کی پھدی میں لن گھسا دیا اور صائمہ آنٹی کی کمر پکڑ کر زور زور سے چوت چودنے لگا.

 

صائمہ مزے سے چوت چدوا رہی تھی اور میں اس بات سے بالا تر کہ ساتھ کمرے میں صائمہ آنٹی کا شوہر ظہیر سو رہا ہے صائمہ آنٹی کی پھدی چود رہا تھا. 10 منٹ مزید صائمہ کی پھدی چودنے کے بعد میری منی صائمہ آنٹی کی چوت میں نکل گئی اور میں نے صائمہ کی کمر کس کر پکڑ کی اور منی کا ایک ایک قطرہ صائمہ آنٹی کی گرم پھدی میں نکال دیا.

 

صائمہ آنٹی بولی عبدل میری پھدی کو بہت مدت کے بعد سکون ملا ہے میں نے کہامجھے بھی آج پٹھان عورت کی پھدی چودنے کا مزا آگیا ہے.

 

پھر میں صائمہ آنٹی کی پھدی سے لن نکال کر صائمہ آنٹی سے لن چسوانے لگا اور پھر صائمہ آنٹی کی چوت چاٹ کر صاف کی

 

صائمہ آنٹی بولی زندگی میں پہلی بار چوت چٹوا کر مزا آیا ہے پھر صائمہ آنٹی نے میرے لن پر بیٹھ کر پھدی چدوائی اور میں نے اس رات صائمہ آنٹی کی رات 3 بجے تک 4 بار پھدی ماری اور پھر گھر آگیا.پھر میں نے صائمہ کو ایک بار پریگنٹ کیا اور صائمہ نے میرا بچہ پیدا بھی کیا اس کے بعد آج تک جب کہ میری شادی بھی ہو چکی ہے صائمہ آنٹی مجھ سے اپنی پھدی چدواتی ہے.

 

صائمہ آنٹی کے شوہر ظہیر اس بات سے بے خبر ہے کہ اسکی بیوی میرے لن کی غلام ہے

 

دوستو کیسی لگی صائمہ آنٹی کی پھدی کی چدائی کمنٹس میں بتائیے گا

 

 

Link to comment

اردو فن کلب کے پریمیم ممبرز کے لیئے ایک لاجواب تصاویری کہانی ۔۔۔۔۔ایک ہینڈسم اور خوبصورت لڑکے کی کہانی۔۔۔۔۔جو کالج کی ہر حسین لڑکی سے اپنی  ہوس  کے لیئے دوستی کرنے میں ماہر تھا  ۔۔۔۔۔کالج گرلز  چاہ کر بھی اس سےنہیں بچ پاتی تھیں۔۔۔۔۔اپنی ہوس کے بعد وہ ان لڑکیوں کی سیکس سٹوری لکھتا اور کالج میں ٖفخریہ پھیلا دیتا ۔۔۔۔کیوں ؟  ۔۔۔۔۔اسی عادت کی وجہ سے سب اس سے دور بھاگتی تھیں۔۔۔۔۔ سینکڑوں صفحات پر مشتمل ڈاکٹر فیصل خان کی اب تک لکھی گئی تمام تصاویری کہانیوں میں سب سے طویل کہانی ۔۔۔۔۔کامران اور ہیڈ مسٹریس۔۔۔اردو فن کلب کے پریمیم کلب میں شامل کر دی گئی ہے۔

×
×
  • Create New...